آگاہی

آگاہی

بچہ روشن دان سے آتا ہے
آسمان سے
یا ماں کے پیٹ سے
وہ ہمیں نہیں بتاتے
اخروٹ کھیلتے
ویڈیو گیمز میں مرتے جیتے
خود لذتی کی دلدل میں ڈوبتے ابھرتے
اسے وردی پہنا دی جاتی ہے
یا شیروانی
نقشے پر ٹانگیں پھیلائے کھڑا آدمی
ہمیں نہیں بتاتا
وہ روشندان سے آیا ہے
آسمان سے
یا ماں کے پیٹ سے

Did you enjoy reading this article?
Subscribe to our free weekly E-Magazine which includes best articles of the week published on Laaltain and comes out every Monday.
Hussain Abid

Hussain Abid

Poet and Musician Hussain Abid, was born in Lahore and is currently living in Germany. His poetry collections; "Utri Konjain", "Dhundla'ay din ki Hidat" and Behtay Aks ka Bulawa" have been praised by the general audience and the critics alike. Hussain Abid collaborated with Masood Qamar to produce "Kaghaz pe Bani Dhoop" and "Qehqaha Isnan ne Ejad kia". Abid's musical group "Saranga" is the first ever musical assemble to perform in Urdu and German together.


Related Articles

سنڈریلا آج گھر نہیں آئی

میں آج بھی شیشے چن رہا ہوں
دیواروں کے اندر
میں خود کو کھڑا دیکھنا چاہتا ہوں
میں خدا لگتا ہوں
میری آنکھیں کمزور ہیں
ان کو بس سب کچھ نظر آتا ہے
اور ان سے رویا بھی نہیں جاتا
جیسے اندر سیسہ بھرا ہو
بینائی ٹن! کر کہ رہ جاتی ہے

اسیری

لی میرے کل: تمہارے معیار پر
پورا اترنے کی کوشش
میری سوچ کی
اسیری کا ثبوت ہے گویا

دیہاتیوں کا گیت

نصیر احمد ناصر:
ہم دیہاتی لوگ ہیں
ہم جانتے ہیں
دھرتی ہم سے اور کچھ نہیں
ہمارے کالبوت واپس مانگتی ہے!