ایک باپ کے آنسو

ایک باپ کے آنسو
ایک باپ کے آنسو
ایک باپ کے آنسو
ہم ٹشو پیپر میں رکھ چھوڑیں گے
اور اسے کبھی سوکھنے نہیں دیں گے
اس میں ہم اپنے آنسو بھی ملاتے جائیں گے
ایک ماں کے آنسو جن کے ہم ذمہ دار نہیں
ان کو سمیٹنے کے لئیے
ہم خدا سے کہیں گے
اب ان آنسوؤں کی رکھوالی تجھےکرنا چاہئیے
اگر نہیں
تو یہ سمندر بھی بن سکتے ہیں
پھر تیری بنائی ہوئی اس دنیا کو
نوح کی کشتی بھی میسر نہیں ہوگی
پھر کیا ہو گا؟
پھر کیا ہونا چاہئیے

Image: BBC Urdu

Did you enjoy reading this article?
Subscribe to our free weekly E-Magazine which includes best articles of the week published on Laaltain and comes out every Monday.

Related Articles

جنت جلتے پیروں نیچے

سدرہ سحر عمران: بندوقوں کے بل پر کتنے تابوت اٹھانے باقی ہیں
کتنی ماؤں کے دل پر
بارود گرانے باقی ہیں؟

Dear God, says an Atheist Mother

I was startled at my own discovery, though I can never really call it a discovery since it was there

Ashra / OM (off)

Natural death of a method actor, or
Methodical death of a natural actor