جامعہ کراچی میں پہلا 'غیر سیاسی' یوم ثقافت گلگت بلتستان

جامعہ کراچی میں پہلا 'غیر سیاسی' یوم ثقافت گلگت بلتستان
29 ستمبر 2016 کو جامعہ کراچی میں پہلی مرتبہ گلگت بلتستان کی ثقافت کا دن منایا گیا۔ گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والے طالب علم آفاق بلاو کا کہنا تھا کہ اس دن کے سلسلے میں منائی گئی تقریبات کی خاص بات ان کا 'غیر سیاسی ہونا تھا، ان کے مطابق ان تقریبات کا کسی بھی طلبہ تنظیم سے کوئی تعلق نہیں۔' آفاق بلاور کے مطابق اس سے قبل یہ دن مختلف طلبہ تنظیمیں اپنے طور پر مناتی تھیں۔ گلگت بلتستان کی ثقافت سے طلبہ کو متعارف کرانے کے لیے گلگت بلتستان کی موسیقی، رقص اور پکوان تقریبات کا حصہ تھے۔ اس موقع پر گلگلت بلتستان کے سیاسی حالات کی جھلک بھی دکھائی دی۔

تصاویر اور رپورٹ: آفاق بلاور

1

2

3

4

5

6

7

8

9

10

Did you enjoy reading this article?
Subscribe to our free weekly E-Magazine which includes best articles of the week published on Laaltain and comes out every Monday.

Related Articles

دھابے جی آئے تو بتانا

مہاتما بدھ نے کہا تھا کہ لوگ بچوں کی طرح ہوتے ہیں، یہ قصے کہانیوں، واقعات اور داستانوں میں بڑی دلچسپی رکھتے ہیں اور انہیں سننے اور دیکھنے کی تمنا بھی رکھتے ہیں۔

ظروف سازی کی دم توڑتی روایت

رہن سہن کھانا پینا اور اوڑھنا بچھونا مہذب معاشرت کی پہلی نشانیاں تھیں۔ تین قدیم تہذیبیں جن میں ایک دریائے دجلہ اور دریائے فرات کے کنارے عراق میں میسوپوٹامیہ کی تہذیب ہے، دوسری دریائے نیل کے کنارے مصر اور تیسری وادی سندھ کی تہذیب ہے سبھی جگہ ظروف سازی کی روایت اور صنعت موجود تھی۔

تصوریت اور حقیقت

نیچرل ازم حقیقت نگاری کی وہ جہت ہے جو عام آدمی کی روز مرہ کی زندگی کے ان پہلوؤں کو پیش کرتی ہے، جو مذہب یا اخلاقیات کے زیر اثر پہلے منصۂ شہود پر نہیں آئے۔