طاہر اسلم گورا کے عشرے

طاہر اسلم گورا کے عشرے


عشرہ: جنگی ترانے مت لگاؤ
ایک دوسرے کے خلاف
جنگی ترانے مت گاؤ
جنگی ترانے گانے بند کر دینے چاہیئں
ایک دن یہ سارے دشمن مر جائیں گے
تمہارے اور ہمارے ہیرو بھی
تمہیں اور ہمیں اُکسانے والے بھی
جنگی ترانے روکنے کی پہل کرنے کی جرات تو کیجئے
سرحدوں پر سپاہی کھڑے کھڑے بوڑھے ہو گئے ہیں
میرے جنرل صاحب کو اپنے جنگی کاروبار کو روکنا ہے
اور آپ کے پردھان منتری کو امن کا اشیر باد دینا ہے

عشرہ: دس سطروں میں بیان
ہم دس سطروں میں اپنا بیان قلمبند کروا سکتے ہیں
وہ اگر ہمیں پکڑنا چاہیں گے تو پکڑ لیں گے
ہم اگر بھاگنا بھی چاہیں تو بھاگ نہیں سکیں گے
ویسے ہم بھاگنا چاہتے بھی نہیں
انہوں نے غداری اور کفر کے فتووں کا ایسا بازار گرم کر رکھا ہے
شہر کا شہر ایک دوسرے کو کافر اور غدار کہتا نہیں تھکتا
ہر کوئی اپنے مخالف کو گولی مارنے سے پہلے کفر اور غداری کی کالک مَلنا چاہتا ہے
ہم اپنے بیان میں ان حقارت آمیز لفظوں کو ڈکشنری سے نکالنے کا مطالبہ کرتے ہیں
ہمارا یہ بیان دس سطروں سے پہلے ختم ہو رہا ہے
کیونکہ لوگوں کا ایک ہجوم ہمیں مارنے کو آرہا ہے


Related Articles

باغی لوگ سوچ کے زاویے بدل رہے ہیں

فاروق خان: ایڈسن نے کہا کہ میرے جسم میں کسی روح کا کوئی وجود نہیں بلکہ جسم خلیوں کا ایک مجموعہ ہے، میں اپنے جسم کی تخلیق کو خدائی معاملہ بالکل بھی نہیں سمجھتا۔ ایڈسن نے مذہبی عقائد کو ایک بکواس کا نام بھی دیا۔

ہمیں منزل نہیں رہنما چا ہیے

الطاف حسین کے بیانات اور ان کے جواب میں تحریک انصاف اور عمران خان کی زبان اور جملے استعمال کسی طرح شریفانہ قرار نہیں دیے جاسکتے۔

عشرہ // کربلا سے مختلف نتائج

ادریس بابر: آگ، اندھیرے سے بجھانے والے
سنگ کو آئینہ دکھانے والے
آئینہ دیکھنے سے ڈرتے ہیں
کربلا دیکھنے سے ڈرتے ہیں