قائد اعظم یونیورسٹی؛ احتجاجی طلبہ کے مطالبات منظور، ہڑتال ختم

قائد اعظم یونیورسٹی؛ احتجاجی طلبہ کے مطالبات منظور، ہڑتال ختم

campus-talks

پرووسٹ قائد اعظم یونیورسٹی ڈاکٹر انور شاہ کی برطرفی کے لیے احتجاج کرنے والے طلبہ نے مطالبات تسلیم کیے جانے پر ہڑتال ختم کر دی ہے۔ یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے پرووسٹ کو ان کے عہدے سے ہٹا دیا گیا ہے۔ قائد اعظم یونیورسٹی میں اسلامی جمعت طلبہ کی سرپرستی اور مالی معاونت کے الزامات کے باعث مختلف قوم پرست طلبہ تنظیموں کے متحدہ پلیٹ فارم قائدیئن سٹودنٹس فیڈریشن کی کال پر کی گئی اس ہڑتال کے باعث یونیورسٹی میں تدریسی سرگرمیاں معطل ہو گئی تھیں، جو اب بحال ہو چکی ہیں۔

طلبہ کی جانب سے اسلامی جمعیت طلبہ کے ایک رکن فیاض باری کے یونیورسٹی پرووسٹ سے مبینہ روابط، مالی امداد اور سرپرستی کے خلاف پیر 7 مارچ کو احتجاج شروع کیا گیا تھا جس میں بعض طلبہ کو ایک سمیسٹر کے لیے معطل کیے جانے کی وجہ سے شدت آ گئی تھی۔ ان طلبہ کو 24 فروری کی شب فیاض باری کو اس کے ہاسٹل سے اٹھا کر زدوکوب کرنے کا الزام عائد کیا گیا تھا جس پر کارروائی کرتے ہوئے یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے تین طلبہ میر واعظ، زرق خان اور عادل کو ایک سمیسٹر کے لیے ہاسٹل سے معطلی اور تیس تیس ہزار جرمانہ کیا گیا۔

فیاض باری کے پاس سے کالعدم تنظیموں کا لٹریچر بھی برآمد ہوا تھا اور اس سمیت اسلامی جمعیت طلبہ کے دیگر اراکین پر طلبہ کو مذہبی اخلاقیات اپنانے پر مجبور کرنے کے الزامات بھی ہیں۔ احتجاج کرنے والے طلبہ کے مطابق وائس چانسلر کی جانب سے ان کی شکایات پر عمل درآمد نہ کرنے کی وجہ سے وہ احتجاج اور تدریسی سرگرمیوں کے بائیکاٹ پر مجبور ہوئے تھے۔

طلبہ کی ہڑتال تین روز جاری رہی اور اس کے نتیجے میں ڈاکٹر انور شاہ کو ان کے عہدے سے ہٹا کر امانت علی کو ان کی جگہ تعینات کیا گیا ہے۔ طلبہ سے مذاکرات ڈین بایولاجیکل سائنسز ڈاکٹر وسیم احمد نے مذاکرات کیے تھے۔ پرووسٹ کی برطرفی کا فیصلہ وائس چانسلر اور دیگر فیکلٹی اراکین کی مشاورت سے کیا گیا۔ ڈاکٹر وسیم نے ہاسٹل سے نکالے گئے طلبہ کی بحالی کے لیے وائس چانسلر سے نظرِثانی کی اپیل کی ہے۔ دوسری جانب اسلامی جمعیتِ طلبہ کی جانب سے کالعدم تنظیموں سے تعلق اور ان کا لٹریچر تقسیم کرنے کے الزامات کی تردید کی گئی ہے۔

Did you enjoy reading this article?
Subscribe to our free weekly E-Magazine which includes best articles of the week published on Laaltain and comes out every Monday.

Related Articles

A Treatise on the Civil Service of Pakistan: The Structural- Functional History (1601-2011)

our young entrants to the elite civil service are capable individuals like their colonial predecessors who left countless footprints on the sands of history with their dedicated hard work and public service in the sub-continent.

یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی ؛ ساتھی طالبات کی تصاویر بلا اجازت پوسٹ کرنے پر طالب علم گرفتار

فیس بک پر ساتھی طالبات کی تصاویر بلا اجازت پوسٹ کرنے اور ذاتی زندگی میں مداخلت کے باعث یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی )یو ایم ٹی ( لاہورکے طالب علم ابوبکر منہاس کو گزشتہ روز گرفتار کر لیا گیا ہے۔

لاء کالج : جمعیت نے اساتذہ یرغمال بنا لئے، "اصل معاملہ ہاسٹلز اور کیمپس پر اجارہ داری کا ہے"طلبہ

جمعیت کے مسلح ارکان نے یونیورسٹی انتظامیہ کی رِٹ چیلنج کرتے ہوئے جمعہ کو لاءکالج پر دھاوا بول دیا اور دو اساتذہ نعیم اللہ اور عمران عالم کو فیکلٹی روم میں بند کر کے اپنی شناخت چھپانے کے لئے سی سی ٹی وی کیمروں کا رخ موڑ دیا۔