لاشیں اور دن ترتیب سے گنے جاتے ہیں

لاشیں اور دن ترتیب سے گنے جاتے ہیں
لاشیں اور دن ترتیب سے گنے جاتے ہیں
جب سب مرد و زن مار دیے گئے
اعضاء بکھرے ہوئے تھے
بے ترتیبی سے
ہاتھ بازوؤں سے الگ
اور پاؤں ٹانگوں سے
سر تن سے جدا
دل سینے سے
اور آنتیں پیٹ سے باہر
شرم گاہیں کُھلی ہوئی
اور ذکور کٹے ہوئے

 

جب سب مار دیے گئے
جسموں کے ٹکڑے اکٹھے کیے گئے
گنتی کے لیے
لاشیں ترتیب سے رکھی گئیں
شناختی نشانوں کے ساتھ
روزنامچے میں
دن، تاریخ اور وقت درج کیا گیا
تا کہ بے حساب مرنے والوں کا
حساب رکھا جا سکے!!

Image: Vann Nath

Naseer Ahmed Nasir

Naseer Ahmed Nasir

Naseer Ahmed Nasir is one the most eminent, distinct, cultured and thought provoking Urdu poets from Pakistan. He is considered as a trend setter poet of modern Urdu poems among his contemporaries. His poetry has been translated into various languages and has several poetry collections to his credit. A lot of his work is yet to be published.


Related Articles

سر کٹے

انہوں نے ہمیں منڈیروں پر بٹھا دیا ہے
تاکہ
جب ہوا تیزچلے تو ہم دوسری طرف بنی کھائی میں گر پڑیں
کبھی نہ اٹھنے کے لئے

عصا بیچنے والو

علی اکبر ناطق: عصا بیچنے والو آؤ میرے شہر آؤ
کہ لگتی ہے یہاں پر عصاؤں کی منڈی
ہرے اور لچکیلے بانسوں کے، شیشم کی مضبوط لکڑی کے عمدہ
عصا بک رہے ہیں

رات کے یتیم بچے

گھڑی کی ہچکیوں میں