پھول تمہارے ساتھ ہیں

پھول تمہارے ساتھ ہیں
تم بھڑوں کے چھتے میں
ایک شہد کی مکھی ہو
تمہیں وحی کو Perform کرنا ہے
وحی جو تم پر کی گئی ہے
تمہیں جیسے تیسے
ایک خالی کونے کو شہد سے بھرنا ہے
ڈٹی رہو
تمہارے چار ہاتھ ہیں
ہر شہر میں باغ ہے
اور پھول تمہارے ساتھ ہیں

Image: Naoto Hattori


Related Articles

ہمارے ہاتھوں کا کوئی معاوضہ نہیں

عذرا عباس: ہمارے ہاتھ ایک بار پھر گھاس کاٹنے پر لگا دئیے گئے
ہمارے ہاتھوں کا کوئی معاوضہ نہیں
ہمیں پھر جوتا جائے گا مال بردار گدھوں کے ساتھ
ہمارا خون چوسنے کے لئے

سوراخوں سے رِستی سیاہی

حسین عابد: میں دیکھتا ہوں
وہ میرا خون
سیاہی میں بدلتے ہیں

ان چکھے گناہ کی مٹھاس

محمد حمید شاہد: میں لذت کی شیرینی میں لتھڑے ہونٹ
اپنی ہوس کی بے صبری زبان سے چاٹ رہا ہوں