ابدی کھیل (نصیر احمد ناصر)

ابدی کھیل (نصیر احمد ناصر)

وقت کے نورانیے میں
تہذیبیں زوال کی سیاہی اوڑھ لیتی ہیں
لیکن اکاس گنگا کے
اَن گنت اَن بُجھ ستارے
لُک چُھپ لُک چُھپ
کھیلتے رہتے ہیں!!
Image: Suzanne Wright Crain

Naseer Ahmed Nasir

Naseer Ahmed Nasir

Naseer Ahmed Nasir is one the most eminent, distinct, cultured and thought provoking Urdu poets from Pakistan. He is considered as a trend setter poet of modern Urdu poems among his contemporaries. His poetry has been translated into various languages and has several poetry collections to his credit. A lot of his work is yet to be published.


Related Articles

گیت بنتا رہتا ہے

سوئپنل تیواری: انتظار سُر ہے اک
مدّتوں جو اک لے میں
خامشی سے بجتا ہے

شہر کا ماتم

علی اکبر ناطق:
زہر در و دیوار کے ڈھانچے کھا جائے گا
شہر کا ماتم کرنے والا کون بچے گا
خون کے آنسو رونے والا کون رہے گا

ثروت حُسین

نظر تک جا رہا ہے گو سفینہ
نظر کی کیا کوئی حدِ نظر ہے ؟
سفر کی کیا کوئی حدِ سفر ہے ؟