پل بھر کے لیے کوئی ہمیں پیار کر لے، جھوٹا ہی سہی

حمیرا اشرف: جو پیار نہیں کرپاتا، یا جسے کوئی لائق پیار نہیں سمجھ پاتا وہ ایک اور ہی فارمولے پر چل نکلتا ہے۔ ہاں اب سب کو روکنا ہے
Read More

ماں ہونا ضروری نہیں

تصنیف حیدر: عورت کا عورت ہونا کافی ہونا چاہیے، جبکہ ماں بنا کر ہم اس کی صنفی کشش اور ضروریات کو دبانے کی خواہش کا اظہار کرتے ہیں۔
Read More

اے میری سہیلی

حمیرا اشرف: میری عزیز از جان میں تو تمھارے مستقبل کے لیے ابھی سے پریشان ہوگئی ہوںمیری مانو تو اپنے فیصلے پر نظرثانی کر لو۔ کیونکہ شادی نہ کرنے پر جو کچھ بھی معاشرے سے سننے کو ملتا ہے وہ اس سب کے آگے کچھ نہیں ہے جو شادی کے بعد سننے کو ملتا ہے۔
Read More

اے میرے دوست

حمیرا اشرف: شادی کے فوراً بعد جو یہ نازک اندام محترمہ پھولنا شروع ہوتی ہیں تو لاکھ روکتے جاؤ لیکن یہ نہیں رکتیں
Read More

سولہ دسمبر 2014ء؛ کیا ہم بھول چکے ہیں؟

حمیرا اشرف: خیر حیرت ضرور ہے کہ کوئی نئی، چونکاتی ہوئی لائن نہیں مل سکی، سب وہی پرانے گھسے پٹے مضامین، جذباتی بے معنی باتیں
Read More

چیخ پر پابندی

تصنیف حیدر: ملک کے مختلف قصبوں، دیہات اور چھوٹے شہروں سے پیسہ کمانے کی لعنت کاطوق گلے میں ڈالے جو نوجوان دہلی میں آتے ہیں، یہاں بستے ہیں، رہتے ہیں، ان کی جنسی تسکین کا کوئی سامان نہیں ہوتا، سوائے اس کے کہ وہ خود پر جبر کیے جائیں۔div>

Read More

علمِ سماجیات: دعوت نامے کی بازطلبی؟

پیٹر برجر: ہم ایک ایسے علمِ سماجیات کی بات کر رہے ہیں جو کلاسیکی دور کے عظیم سوالوں کی جانب لوٹ جائے، جو وسیع المشرب اور طریقیاتی لچک رکھتا ہو، نظریاتی جبر کے خلاف ہو۔
Read More

"حال حوال" بلوچستان میں آن لائن صحافت کا نیا باب

شبیر رخشانی: بلوچستان سے متعلق بامعنی اور مہذب علمی مکالمے کا فروغ "حال حوال" کا بنیادی مطمع نظر ہے۔
Read More

سرفروشی کی تمنا، کم ہمتی کی علامت ہے

ڈاکٹر عرفان شہزاد: بڑا لیڈر وہ نہیں جو زیادہ سے زیادہ لوگوں کو بے وقوف بنا لے، زیادہ بڑے طبقے کو جنون میں مبتلا کر دے، بڑا لیڈر وہ ہے جو لوگوں کو سوچنے سمجھنے پر لگا دے۔
Read More

غلامی کی نماز

وقاص عالم: سیاست سے لے کر معاشرت تک تمام شعبہ ہائے زبدگی زوال پذیر ہیں۔ مگر اس سب کے باوجود ہم محض "اللہ ہو" کے ورد اور "اللہ اکبر" کے نعروں پر اکتفا کیے ہوئے ہیں۔
Read More

پاکستان میں الحاد کے فروغ کی وجوہ

علی رضا: میرا ذاتی خیال یہ تھا کہ یہ لوگ شاید کسی فلسفیانہ پس منظر سے تعلق رکھتے ہوں گے یا ایلیٹ کلاس سے جن کا مذہب سے ےتعلق بہت ہی ثانوی سا ہوتا ہے۔ لیکن میری توقعات کے برعکس اکثر ملحدین بہت ہی مذہبی گھرانوں سے تعلق رکھتے ہیں۔
Read More

مذہب آسان ہدف کیوں؟ مذہب بیزار تصنیف حیدرکے نام خط

سدرہ سحر عمران: تمہیں کیسے پتہ جو تم نیک عمل کر رہے ہو وہ انسانیت کی بھلائی اور خیر خواہی ہے۔ اور جو دوسرے کر رہے ہیں وہ محض فساد فی الا رض ہے۔ وہ کون سا پیمانہ ہے جس کی مدد سے ہم خیر اور شر کو علیحدہ کر سکتے ہیں۔
Read More

عورتیں جنسی جرائم رپورٹ کیوں نہیں کرتیں؟

ملیحہ سرور: بہت سی خواتین راستے میں، بازار میں، دفتر میں، کالج اور یونیورسٹی میں ہونے والی جنسی ہراسانی کو اس لیے بھی برداشت کرنے پر مجبور ہیں کہ اگر وہ ایسے واقعات رپورٹ کریں گی تو انہیں پہلے سے بھی زیادہ شدید نگرانی اور پابندیوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔
Read More

گلگت بلتستان کی قاتل سڑکیں - مدیر کے نام خط

نور اکبر: جان لیوا حادثات کے وقوع پزیر ہونے میں جہاں شہریوں کی مجرمانہ غفلت اور غیر ذمہ دارانہ رویہ کارفرما ہے وہیں حکومت اور متعلقہ اداروں کو بھی بری الزمہ قرار نہیں دیا جاسکتا۔
Read More

مرد عورتوں کے بارے میں کیا باتیں کرتے ہیں

ملیحہ سرور: یہ صرف ڈونلڈ ٹرمپ ہی نہیں جو اپنی نجی محافل میں عورتوں کو پکڑنے، چھونے، بوس و کنار کرنے اور ان کے ساتھ من چاہا سلوک کرنے کی خواہشوں کا اظہار کرتے ہیں، بدقسمتی سے مردانہ گفتگو میں عورتوں کا تذکرہ انہی معنوں میں اکثر جگہ ہوتا ہے۔
Read More