Literature

Back to homepage


جنم سے چتا تک

’’میں نے پہلی بار یہ منظر تبھی دیکھا تھا جب جب رتھ بان نے مجھ کو بتایا تھا کہ مُردہ جسم کے انتم چرَن کی یاترا میں اُس کو اگنی کے حوالے کر دیا جاتا ہے ۔۔۔ تب اک بار

Read More

کنجڑا، قصائی

تحریر: انور سہیل انتخاب و ترجمہ: عامر صدیقی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ “کنجڑے قصائیوں کو تمیز کہاں۔۔۔ تمیز کا ٹھیکہ تمہارے سیدوں نے جو لے رکھا ہے۔” محمد لطیف قریشی عرف ایم ایل قریشی بہت دھیرے بولا کرتے۔ مگر جب کبھی بولتے بھی

Read More

دوزخ

“پاپ کا کیا انجام ہے؟” اک بھکشو نے پوچھا آنکھیں موندے ’دھیان‘ کی گہری حالت میں تھے لیِن تتھاگت چونک گئے اس بچوں جیسی بھولی بھالی بات کو سُن کر اک لمحہ خاموش رہے پھر آنکھیں کھولیں بولے، “بھکشو، اور

Read More

کچا

جیم عباسی: اپنے سامنے بیٹھے چہروں پر نظر ڈالتے اس نے داہنے ہاتھ سے بمشکل مائیک کو پکڑا۔ آگے بولا تو آواز گرج میں تبدیل ہو چکی تھی۔ اسے لگا جیسےاس کے اندر طاقت کے تمام تر ذرات بھر دیے گئے ہوں۔

Read More

میں خود سے مایوس ہوں

صدف فاطمہ: تم وہ ہر حسین منظر تھے
جس سے کائنات میں دیدہ ور سیراب ہیں

Read More

جھوٹا سچ

"یہ ریڈیو پاکستا ن ہے۔ اب آپ شکیل احمد سے خبریں سنیے۔۔۔ مشرقی محاذ پر ہمارے بہادر جوان دشمن کو مولی گاجر کی طرح کاٹ رہے ہیں۔۔۔" اپنےوجود میں دوڑنے والی سنسناہٹ پر میرا بس نہیں چل رہا تھا، جی

Read More

کشمیری شال

وہ جو دور کھڑکی پہ لٹکی ہے دھوپ سے بچنے کو، کسی نے بہت چاؤ سے کشمیر کی تنگ گلیوں سے خریدی ہو گی جانے خواہشوں کے کتنے چکور ، انجان پہاڑوں سے اڑ کر، اُس وادی میں آن بیٹھے

Read More

منیر احمد فردوس کے افسانے "کالی شلوار والی" کا تاثراتی جائزہ

پہلے دو باتیں منیر احمد فردوس کے بارے میں اختصار میں جامعیت جس طرح میں نےمنیر احمد فردوس کے ہاں دیکھی ہے یہ چیز کم کم ہی دوسرے ہم عصر لکھاریوں میں دیکھنے کو ملتی ہے۔ جہاں اختصارافسانے کا حسن

Read More

آسان رستے کا مسافر

حسین عابد: خون کی ہولی کھیلتے
اس کی چمکتی بتیسی میں
مردہ آدمی کے دانت کچکتے رہتے ہیں

Read More

آزُوقہ

نصیر احمد ناصر: ایک زمیں کے ٹکڑے سے بھی
کیا کچھ حاصل ہو سکتا ہے!

Read More

قتل گاہیں (ایک ٹیلی ڈاکیومنٹری)

کورس : chorus: دو مرد، دو عورتیں راوی ایک : کیمرہ رولنگCamera rolling راوی دو : کیمرہ ذوُم Camera zoom ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کورس : وہ لاشیں جن کو شمال مغرب سے آنے والے ہلاکوؤں نے یہیں کہیں، اس زمیں میں دفنا

Read More

خوشی/ اداسی

جیون ایسی کتھا جس میں خوشی اور اداسی کے سائے ہمہ وقت گڈمڈ رہتے ھیں پل دو پل کو خوشی کا سورج افق کے پار ابھرے تو اداسی اپنے طویل پنکھ پھیلاتی ھے اور دل پر اندھیرے کا کبھی نہ

Read More

بساند

آصف زہری: کتابوں اور جالی کے درمیان گوریوں کے گھونسلے اور پر وغیرہ تھے۔ اس نے جھاڑو سے جمع شدہ سارا کوڑا کرکٹ سمیٹ کر بالٹی میں ڈالنا شروع کیا۔ ایک گھونسلے میں دو انڈے بھی تھے جو بالٹی میں گرتے ہی ٹوٹ گئے۔

Read More

شاعری، امکانات اور بے کرانیت

ایک شاعر ناممکن سے ممکن کی راہ نکالتا ہے۔ ہر وہ خیال جسےایک عام ذہن بنجر اورخشک تصور کر لیتا ہے، شاعر اس میں نمی کی موجودگی کا خیال پیش کرتا ہے۔ بظاہر یہ اتنا مشکل معلوم نہیں ہوتا،لیکن جب

Read More

طبیب بھنبھنا گیا (ستیہ پال آنند)

فَتَکلّمُواَ تُعرَفُوا کلام کرو تا کہ پہچانے جاؤ۔۔۔۔۔۔ حٖضرت علی کرم اللہ وجہہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ طبیب بھنبھنا گیا میں سب علاج کر کے تھک گیا ہوں، پر یہ بچہ بولتا نہیں زبان اس کی ٹھیک ٹھاک، تندرست ہے کہیں بھی کوئی

Read More