ہم اپنے زمانے سے بچھڑے ہوئے ہیں

ہم اپنے زمانے سے بچھڑے ہوئے ہیں

ہمیں کس نگر میں تلاشو گے
کن راستوں کی مسافت میں ڈھونڈو گے
کس رزم میں ہم کو جیتو گے، ہارو گے
کس بزم میں نام لے کر ہمارا پکارو گے
تاریخ کے کس ورق میں پڑھو گے
زمینوں زمانوں، مکینوں مکانوں کی حد سے پرے
کتنا آگے بڑھو گے
ہمیں کب، کہاں مِل سکو گے؟

Did you enjoy reading this article?
Subscribe to our free weekly E-Magazine which includes best articles of the week published on Laaltain and comes out every Monday.
Naseer Ahmed Nasir

Naseer Ahmed Nasir

Naseer Ahmed Nasir is one the most eminent, distinct, cultured and thought provoking Urdu poets from Pakistan. He is considered as a trend setter poet of modern Urdu poems among his contemporaries. His poetry has been translated into various languages and has several poetry collections to his credit. A lot of his work is yet to be published.


Related Articles

مرتے ہیں آرزو میں مرنے کی !!

وفاقی حکومت نے دوران ملازمت وفات پا جانے والے سرکاری ملازمین کے لیے جاری ہونے والے امدادی پیکج میں تین سو فیصد تک اضافہ کردیا ہے ۔ اس خبر کے جاری ہونے کے بعد درجنوں بیمار ملازمین خوشی سے وفات پا گئے اور گریڈ ایک تا چار کے غریب ملازمین نے اپنی لمبی زندگی کے لیے دعائیں مانگنا چھوڑ دیں۔

ایم کیو ایم کا مینڈیٹ تسلیم کریں

کراچی کے لوگوں نے ایم کیو ایم کو بھاری اکثریت دے کر کامیاب کروایا ہے اور تحریک انصاف اور جماعت اسلامی کے دو جماعتی اتحاد کو مسترد کردیاہے

Ashra / OM (off)

Natural death of a method actor, or
Methodical death of a natural actor