Mob the Omnipotent

Mob the Omnipotent
Mob the Omnipotent
آدم باغ سے نکل کر ہجوم بن گیا تھا
ہجوم آدمی ہے
ہجوم کچھ بھی کر سکتا ہے

ہجوم نبی کے جوتے خون سے بھر سکتا ہے
اور مکہ کی فتح کے دن
اسلام قبول بھی کر سکتا ہے
ہجوم سیاست کا پیٹ
اور کاروبار کی پیٹھ ہے
ہجوم سرسید کو نچوا سکتا ہے
ٹرمپ کو کنگ بنا سکتا ہے
ہجوم پوپ کو گرا سکتا ہے
Bob کو اٹھا سکتا ہے
ہجوم لشکر ہے
ریڈ آرمی ہے

ہجوم کچھ بھی کر سکتا ہے
ہجوم آدمی ہے

Related Articles

وقت کا چڑیا گھر

ثروت زہرا: سلاخوں کے اندرکا پورا علاقہ میری دسترس میں
دے دیا گیا ہے
مگر تماش بینوں کے روائتی شوق سے پہنچنے والی
اذیت سے تحفظ بھی دیا جا رہا ہے

Theory

سارا دن دھوپ دیوار
دیکھتا رہتا ہوں
ٹرمیں سوچتا رہتا ہوں
نظمیں توڑتا رہتا ہوں
تھیسز جوڑتا رہتا ہوں

پَونیا

نصیر احمد ناصر: مجھے مت پہنو!
میں تمہاری مٹی جیسا شفّاف
اور تمہارے ریشم جیسا نرم نہیں