ورثہ (ثروت زہرا)

ورثہ (ثروت زہرا)

[/vc_column_text][/vc_column][/vc_row]

 

Heritage

Life was bequeathed a love of mirrors
And mirrors hold her love's reflections.

Life will ever gaze at reflections,
Will ever kiss Love's frozen shapes.

Smash the mirrors to touch Love's warmth!
But Life was bequeathed a love of mirrors.

Translation: Dr. Rizwan Ali

ورثہ

 

زندگی کو آئینوں سے محبت 
ورثے میں ملی ہے 
اور آئینے میں اس کی محبوب کا عکس 
منجمد کردیا گیا ہے 
زندگی عکس کو دیکھ سکے گی 
عکس کے منجمد زاویوں پر 
اپنے ہونٹ رکھ سکے گی 
مگراپنے محبوب کی حرارتوں کو 
چھونے کے لئے ،
اسے آئینے کو توڑنا پڑے گا 
لیکن زندگی کو تو 
آئینوں سے محبت ورثے میں ملی ہے

Image: christian schloe


Related Articles

ڈھلتی دوپہر کی چُپ میں

حسین عابد: خدا اوپر رہتا ہے
دوپائے، چرند پرند نیچے
آنا جانا لگا رہتا ہے

شاعری میں نے ایجاد کی

افضال احمد سید: کاغذ مراکشیوں نے ایجاد کیا
حروف فونیشیوں نے
شاعری میں نے ایجاد کی

میں جا چکی ہوں

نسیم سید: میں اپنے ہونے کے اورنہ ہونے کے
مخمصے سے
نہ جانے کب کی
نکل چکی ہوں