ست سورمیون کا شاعر؛ شاہ عبدالطیف بھٹائی

ست سورمیون کا شاعر؛ شاہ عبدالطیف بھٹائی
سندھ دھرتی کی سات شہزادیوں کی داستانیں رقم کرنے والے شاہ عبدلطیف بھٹائی کا سہ روزہ عرس ہر برس چودہ صفر کو شروع ہوتا ہے۔ سندھ کے مولانا روم قراردیے جانے والے صوفی شاعر کی شاعری انسانی کے بنیادی وجودی سوالات کا جواب دینے لے علاوہ سندھی معاشرت کو برداشت، امن اور پرامن بقائے باہمی کا گہوارہ بنانے کا بھی باعث ہے۔ سندھی جبروابتلاء کے ہر دور میں شاہ جو رسالو کی ابیات گنگناتے اپنی دھرتی اور انسان سے محبت کا پیغام پھیلاتے رہے ہیں۔

bhit-shah-1

bhit-shah-2

bhit-shah-3

bhit-shah-4

bhit-shah-5

bhit-shah-6

bhit-shah-7

bhit-shah-8

bhit-shah-9

bhit-shah-10

bhit-shah-11

bhit-shah-12

bhit-shah-13

Umair Vahidy

Umair Vahidy

Umair Vahidy is Head of Digital Communications at Khudi Pakistan and The Laaltain.


Related Articles

نظام الدین اولیاء کی درگاہ پر بسنت پنچمی منانے کا آغاز کیسے ہوا؟

اپنے چہیتے شاگرد کو اس طرح بھیس بدل کر گاتے ہوئے خود کو مناتے دیکھ کر نظام الدین اولیا مسکرا دیے۔ تب سے لے کر آج تک ان کےمریدین ہر برس بسنت کے موقع پر پیلا لباس پہن کر، پھول اٹھائے یہی قوالی گاتے چلے آ رہے ہیں۔

Literature as the key?

The second Literature Festival in Islamabad featured more than 122 speakers in about 70 different sessions dealing with all kinds of topics....

آخر اردو کیوں نہیں؟

ہمارے ہاں کسی بھی موضوع پر بات کرنا بھڑوں کے چھتے میں ہاتھ ڈالنے کے برابر ہے۔