Posts From فیثا غورث

Back to homepage
فیثا غورث

فیثا غورث

ایک گیت گایا نہیں جا سکتا (فیثا غورث)

ایک گیت تمہیں گھیر لیتا ہے ایک گیت جو تم نے سن رکھا ہے ایک گیت جو تم کبھی نہیں سنو گے راستے میں چلتے ہوئے گھیر لیتا ہے ایک گیت تمہیں گلے لگا لیتا ہے ایک گیت جس کے

Read More

تمہاری وجہ سے (فیثا غورث)

تمہاری وجہ سے میں ایک خلا نورد نہیں بن سکا میرے مجسمے کسی چوک پر نصب نہیں ہوئے میرے نام سے کوئی سڑک منسوب نہیں کی گئی میرے کارناموں پر کہیں کوئی مقالہ نہیں لکھا جا سکا اور کوئی قومی

Read More

کتبہ (فیثا غورث)

میں نے اک گیت لکھا اور اس نے اپنی نبضیں کاٹ لیں میں نے اک نظم کہی اور وہ چھت سے کود گئی میں نے اک کہانی بُنی اور وہ پھندے سے لٹک گئی میں نے اک بچہ جنا اور

Read More

ایک دن اپنے ہاتھوں سے میں ایک رسی بُنوں گا

فیثا غورث: ایک دن اپنے ہاتھوں سے میں ایک رسی بُنوں گا
اور اس رسی کے ایک سرے سے خود کو باندھ کر اچھال دوں گا
ہو سکتا ہے میں چاند میں جا کر اٹک جاوں
ہو سکتا ہے میں رات کے چند گچھے توڑ لے آوں
ہو سکتا ہے میں اڑتے اڑتے دور نکل جاوں
Read More

نروان

آج کی پہلی مشت زنی کے بعد میں تھک کر بیٹھ گیا۔ مجھے اب مچھروں، اٹھائی گیروں اور رات کی پرواہ نہیں رہی لیکن دن کا خوف ابھی باقی ہے۔
Read More

میں نے حیرت کو قتل کیا

میں نے میں نے حیرت کو قتل کیا
اورتحیر کی لاش دریافت ہونے تک میں خود کو محفوظ خیال کر سکتا ہوں
کو قتل کیا
اورتحیر کی لاش دریافت ہونے تک میں خود کو محفوظ خیال کر سکتا ہوں
Read More

سایہ

آخری بس کے انتظار میں بس سٹاپ پر میں نے خود کوبس سٹاپ سے ذرا فاصلے پر کوڑے کے ڈھیر کے پار گلی میں روپوش ہوتے دیکھا جہاں میں نے خود کو پستول دکھا کر لوٹا، اپنے سامنے دری پر چند سکےپھینکے اوراپنے گھر کی دیوار پھلانگی۔
Read More

ہمیں زندہ نہیں رہنے دیا گیا

ہمیں زندہ رہنے کا معاوضہ نہیں دیا گیا
نہ قسطوں میں، نہ پیشگی کچھ اور نہ کام مکمل ہوجانے پر
Read More

اسفل المخلوقات

ہماری عورتوں کا دودھ دوہنے کے بعد
ہمیں ہلوں میں جوت دیا گیا
Read More

کن فیکون

اس نے وجدان کے کسی لمحے میں عالم برزخ کا تمام روحانی گردا فلکیاتی تمباکومیں مسلا اور کائناتی رذلے میں بھر کر ایک الہامی کش لیا ۔۔۔۔ دھواں ارض و سما کی شکل میں مجسم ہو گیا۔
Read More

حکایات جنوں

خدا کے ترازو کے آس پاس داڑھیوں، مسواکوں، تسبیحوں، مصلوں، برقعوں،صحیفوں، کھجوروں، تلواروں، ٹخنے سے اونچی اور ٹخنے سے نیچی شلواروں اور لوٹوں کا ڈھیر لگا ہوا تھا ، خدا نے انسانوں کی صرف روحیں تولنے کا حکم دے دیا تھا۔
Read More