خواب کا ڈمرو

خواب کا ڈمرو

ڈارون کی لاش پہ تانڈو ناچ رچانے والا بندر
پوچھ رہا تھا
نیٹشے کے یبھ کو سن کر زرتشت نے آخر بولا کیا تھا
سی ایم ایچ روڈ کی اُترائی پر ایک نیانا
ایک مروڑی تار سے سائیکل ٹائر گھمائے جاتا تھا
کار میں بیٹھا میرا ہیولا
آئنسٹائن کی relativity کی گھمن گھیری پاٹتے پاٹتے
ڈوب چکا تھا
میرے وقت اوراُس کے سمے کے بیچ یہ صد صدیوں کا بندر
سپیس ٹائم کی چادر اوڑے ناچ رہا ہے
آئنسٹائن سہی کہتا تھا
ماس انرجی دونوں ایک ہی ہیں
یہ سب ہندسوں کا چکر ہے
اگنی کے ہاتھ سے لکھے ہندسے
پھر سے نئے ذرے کی کھوج میں نٹ راجا سے نئے کَرَنڑ کا پاٹ پڑھیں گے
اور مرا بیمار ذہن پھر سو جائے گا
زینکس رات کا دیمک بن کر ،
میری نظمیں چاٹ رہی ہے
اور میں اک دیوار پے بیٹھا
خواب کا ڈمرو پیٹ رہا ہوں
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
کَرَنڑ یا करण

Karanas are the 108 key transitions in the classical Indian dance described in Natya Shastra. Karana is a Sanskrit verbal noun, meaning "doing"

گھمن گھیری۔ بھنور کے معنی میں استعمال ہونے والا پنجابی کا لفظ

https://en.m.wikipedia.org/wiki/Tandava

https://en.m.wikipedia.org/wiki/Thus_Spoke_Zarathustra

https://en.m.wikipedia.org/wiki/Karana_(dance)

Did you enjoy reading this article?
Subscribe to our free weekly E-Magazine which includes best articles of the week published on Laaltain and comes out every Monday.
Razi Haider

Razi Haider

Razi Haider is an engineer by profession , Kashmiri by heart , a poet and photographer. His Interests include politics, ontology, ethical philosophy, theology film and photography history.


Related Articles

ہمارے ساتھ چلنا ہے تو آؤ

علی زریون: یہ رستہ
ایسے بازارِ ملامت سے گزرتا ہے
جہاں ہر سمت سے طعنوں کے پتھر مارے جاتے ہیں

صدا کر چلے

کسی موہوم سی آسائشِ فردا کے چکر میں
حکایاتِ غمِ دیروز کا نقشہ بدلنا کیوں
تمہیں کس نے کہا ہر سست رو کے ساتھ چلنے کا
سبک قدمی میں لیکن سبزۂ رَہ کو کچلنا کیوں

نارسائی کی دسترس

زمین سے آسمان تک کی مسافتوں کی کسے خبر ہے؟
رسائی ہو جائے تو غنیمت
نہ ہو سکے تو
یہ نارسائی بھی اپنی نظروں میں معتبر ہے